پاک چین اقتصادی راہداری کی تکمیل کے لئے ٹائم لائن کا اطلاق، فنناسنگ کی منصوبہ بندی اور حکمت علمی پر توجہ

Share on facebook
Share on twitter
Share on email
Share on whatsapp

پلاننگ اینڈ ڈویلپمنٹ  کے وفاقی وزیر احسن اقبال نے کہا ہے کہ  چین پاکستان اقتصادی راہداری عوام کے لئے ایک طے کے عوام کے لئے ایک ” قسمت مبدل” منصوبہ  ہے۔ پالیسی اصلاحات کے لئے انسٹی ٹیوٹ ( آئی پی آر ) کی طرف سے منعقد ” CPEC کی وادی” پر ایک سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے  کہا کہ یہ منصوبہ  اس ملک کے تمام صوبوں اور علاقوں کے لئے فائدہ مند ہے  اور  اس منصوبے کو سیاست زدہ نہیں کیا جانا چاہئے انہوں نے کہا کہ  سرمایہ کاری قومی معیشت کو فروغ دینے  کے لئے  ایک اہم کردار ادا کرے گا اور چین کے ساتھ تجارت کرنے کے لئے مختصر ترین راستے بنائیں جائیں گے۔اس موقع پر چینی  سفارت خانے سے اس  مشن کے نائب سربراہ زائو لی جان  نے اس منصوبے کے ذریعے پاک چین تعلقات کو مزید مزید مستحکم کرنے کے عزم کا اعادہ کیا ہے۔اس سیمنار میں آئی پی آر کے چیئرمین ہمایوں اختر خان نے کہا ہے کہ اس  پر ایک   منصوبے کی تکمیل کے لئے ٹائم لائنز کا اطلاق ، فنانسنگ کی منصوبہ بندی اور حکمت عملی پر عملدرآمد    CPEC کی وضاحت کرنے کے لئے حکومت ان معاملات کو زیر ِ بحث لا کر منصوبہ کی تکمیل کو یقینی بنائیں .